ناموس رسالت کا مجرم اپنے کیفر کِردار کو پہنچ گیا

گستاخانہ خاکے بنانے والا سویڈن کا 75 سالہ ملعون کارٹونسٹ لارس ولکس اتوار کے روز ایک عبرتناک کار حادثے میں ہلاک ہوگیا ہے۔

لارس ولکس نے 2007 میں گستاخانہ خاکے بنائے تھے اور اس کے بعد سے پولیس اس کی حفاظت پرتعینات تھی حادثے میں حفاظت پر تعینات دونوں پولیس اہلکار بھی مارے گئے ۔

پولیس کے مطابق لارس ولکس کی گاڑی ٹرک سے ٹکرا گئی جس سے دونوں گاڑیوں میں آگ لگ گئی تھی اور ٹرک ڈرائیور کو اسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔ حادثے کی وجہ فی الحال واضح نہیں ہے۔پولیس کی جانب سے کہا گیا ہے کہ یہ ابھی تک واضح نہیں ہے کہ کار اور ٹرک کی ٹکر کیسے ہوئی تاہم ابتدائی طورپر اس میں کسی کے ملوث ہونے کے شواہد نہیں ملے۔

علاقائی پولیس سربراہ کارینا پرسن نے کہا “جس شخص کی ہم حفاظت کر رہے تھے، وہ اوراس کے دو ساتھی اس ناقابل فہم اور خوفناک حادثے میں مر گئے ہیں۔”

ملعون لارس ولکس نے 2007 میں گستاخانہ خاکے بنائے جس سے مسلمانوں میں غم و غصہ کی لہر دوڑ گئی تھی،پولیس اسے تحفظ فراہم کرتی تھی
لیکن تحفظ فراہم کرنے والے اور ملعون دونوں انجام کو پہنچے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *